غزل : اکمل حنیف

باتیں تری  غلط  نہ  ترے  ضابطے  غلط لیکن تجھے جو ملتے ہیں وہ مشورے غلط اب واپسی کی راہ …

غزل : ع۔ع۔عالم

دعا تو  کرتا ہوں پر ، بد دعا  نہیں کرتا میں زندگی کو کبھی بھی خفا نہیں کرتا خموش رہنے لگا ہوں ،صدا نہیں کرتا…

غزل : ناصر علی سید

شبِ فراق خیالِ وصال کم کم ہے یہ اور بات طبیعت بحال کم کم ہے جو ایک رسم  چلی تھی مزاج پُرسی کی…

غزل : خالد شریف

رخصت ہوا  تو  بات  مری  مان  کر  گیا جو اس کے پاس تھا وہ مجھے دان کر گیا بچھڑا کچھ اس ادا سے کہ رت ہی بدل گئی اک…