ایک نثری نظم

از : یونس خیال

اس بار ساون میں
مرے کچے مکان کی دیواریں
زمین بوس ہوگئیں
ان کی مٹی گھل گئی اور چھت کے تنکے
پانی میں بہہ گئے
میں گھُلی مٹی اور بہتے تنکوں پرکھڑا
صرف اس لیے مزید بارش کی دعائیں مانگتارہا
کہ اُسے بارش میں بھیگنا اچھا لگتا تھا۔

You might also like

Leave A Reply

Leave Your Comments for this Post