نعت : مُحمَّد خلیل الرَّحمٰن خلیلؔ

محمد خلیل الرحمان خلیل
مُحمَّد خلیل الرَّحمٰن خلیلؔ
جب یہ سرکار کی اُلفت رگ ِ جاں ہوتی ہے
دل میں تب خواہش ِ دیدار جواں ہوتی ہے
دل مدینے میں محبّت کے سبب کِھلتے ہیں
“ ہر طرف نُور کی بارش جو رواں ہوتی ہے”
چُوم لیتا ہوں انگوٹھے جو سُنوں نام ِ نبیؐ
جب مِرے پاس مساجد میں اذاں ہوتی ہے
یہ فقط ذکر ِ علی کا ہے کرشمہ دیکھا
بغض ہو یا کہ خوشی رُخ سے عیاں ہوتی ہے
کس میں ہمّت ہے کہ وُہ نعت کہے خود اُنکی
یہ تو توفیق ِ عطا سے ہی بیاں ہوتی ہے
کھینچ لیتی ہے وُہ پروانے کو اپنی جانب
دل میں اک شمع رسالتؐ جو نہاں ہوتی ہے
اشک کرتے ہیں بیاں حالت ِ دل آپ خلیلؔ
پہنچ کر در پہ یہ کب بس میں زباں ہوتی ہے
مُحمَّد خلیل الرَّحمٰن خلیلؔ ، اسلام آباد

You might also like
  1. Muhammad Musab Khalil says

    Ma sha Allah bht khoob

Leave A Reply

Leave Your Comments for this Post