غزل :کاظم علی

اول  تو  تیرے بعد محبت نہیں ہوگی
ہوگی بھی تو پہلی سی وہ شدت نہیں ہوگی

اب جبکہ تری بزم سے ناتا نہیں کوئی
سو مجھ سے تری بزم میں شرکت نہیں ہوگی

اک روز تری یاد سے دامن چھڑا لوں گا
اک روز تیری یاد سے وحشت نہیں ہوگی

اک روز ترا نام بھی لب سے جدا ہوگا
اک روز ترے نام سے رغبت نہیں ہوگی

اک دن فنا ہو جائے گی دم توڑتی حسرت
اک دن مرے دل کو تری حسرت نہیں ہوگی

You might also like

Leave A Reply

Leave Your Comments for this Post