Al-Quran (القرآن)

بشکریہ جناب صداقت بلوچ
سورة التوبة، آیت 115
وَ مَا کَانَ اللّٰہُ لِیُضِلَّ قَوۡمًۢا بَعۡدَ اِذۡ ہَدٰىہُمۡ حَتّٰی یُبَیِّنَ لَہُمۡ مَّا یَتَّقُوۡنَ ؕ اِنَّ اللّٰہَ بِکُلِّ شَیۡءٍ عَلِیۡمٌ ﴿۱۱۵﴾
اور اللہ ایسا نہیں ہے کہ کسی قوم کو ہدایت دینے کے بعد گمراہ کردے جب تک اس نے ان پر یہ بات واضح نہ کردی ہو کہ انہیں کن باتوں سے بچنا ہے ۔ ( ٩٢ ) یقین رکھو کہ اللہ ہر چیز کو خوب جانتا ہے ۔
Sunnan e Ibn e Maja Hadees # 774
حَدَّثَنَا أَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ، ‏‏‏‏‏‏حَدَّثَنَا أَبُو مُعَاوِيَةَ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ الْأَعْمَشِ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ أَبِي صَالِحٍ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ:‏‏‏‏ إِذَا تَوَضَّأَ أَحَدُكُمْ فَأَحْسَنَ الْوُضُوءَ، ‏‏‏‏‏‏ثُمَّ أَتَى الْمَسْجِدَ لَا يَنْهَزُهُ إِلَّا الصَّلَاةُ، ‏‏‏‏‏‏لَا يُرِيدُ إِلَّا الصَّلَاةَ، ‏‏‏‏‏‏لَمْ يَخْطُ خَطْوَةً إِلَّا رَفَعَهُ اللَّهُ بِهَا دَرَجَةً، ‏‏‏‏‏‏وَحَطَّ عَنْهُ بِهَا خَطِيئَةً، ‏‏‏‏‏‏حَتَّى يَدْخُلَ الْمَسْجِدَ، ‏‏‏‏‏‏فَإِذَا دَخَلَ الْمَسْجِدَ كَانَ فِي صَلَاةٍ مَا كَانَتِ الصَّلَاةُ تَحْبِسُهُ .
رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: جب کوئی شخص اچھی طرح وضو کرے، پھر مسجد آئے، اور نماز ہی اس کے گھر سے نکلنے کا سبب ہو، اور وہ نماز کے علاوہ کوئی اور ارادہ نہ رکھتا ہو، تو ہر قدم پہ اللہ تعالیٰ اس کا ایک درجہ بلند کرتا ہے اور ایک گناہ مٹاتا ہے، یہاں تک کہ مسجد میں داخل ہو جائے، پھر مسجد میں داخل ہو گیا تو جب تک نماز اسے روکے رکھے نماز ہی میں رہتا ہے ۔
Sahih Hadees
السلام علیکم و رحمتہ اللہ
یاالله! ہم تیری ہی عبادت‎ ‎کرتے ہیں‎ ‎اور‎ ‎تجھ‏ ہی سے‎ ‎مدد مانگتے ہیں. بس تو ہم سب کو سیدھا راستہ دکھا، تمام گناہوں کو معاف فرما. ہماری بخشش فرما. ہماری پریشانیوں کو دور فرما اور ہمیں صراط مستقیم پر چلنے اور نیک صالح عمل کرنے کی توفیق عطا فرما۔ ہمیں اپنے سوا کسی اور کا محتاج نہ بنا. ہمیں دین کی سمجھ عطا فرما، ہمارے دلوں میں ہدایت ڈال، ہمیں نفس کی برائی سے بچا اور روز محشر ہمارے حساب کو آسان فرمانا۔ یا رحمٰن و رحیم! پاکستان کو مستحکم بنا۔ اس کے دشمنوں کو نامراد کر۔
آمین‎ ‎

You might also like

Leave A Reply

Leave Your Comments for this Post