غزل ۔۔۔ شاعر: جون ایلیا


جون ایلیا

ذکر بھی اس سے کیا بَھلا میرا
اس سے رشتہ ہی کیا رہا میرا
آج مجھ کو بہت بُرا کہہ کر
آپ نے نام   تو    لیا میرا
آخری بات تم سے کہنا ہے
یاد    رکھنا     نہ تم کہا    میرا
وہ بھی منزل تلک پہنچ جاتا
اس نے ڈھونڈا نہیں پتا میرا
تُجھ سے مُجھ کونجات مِل جائے
تُو دُعا کر کہ ہو     بَھلا      میرا
کیا    بتاؤں بچھڑ گیا    یاراں
ایک بلقیس     سے سَبا میرا
You might also like

Leave A Reply

Leave Your Comments for this Post