محبت اپنے حصے کی محبت مانگ لیتی ہے : یوسف خالد

درِ وابستگی پہ رکھ کے سر حسنِ عقیدت سے
محبت اپنے حصے کی محبت مانگ لیتی ہے
محبت ایک ایسا احساس ہے کہ جب رگ و پے میں اتر جاتا ہے تو خبر ہوتی ہے – یہ اعلان نہیں کرتا لہو میں گھل جاتا ہے – اس کا خمار آنکھوں میں اترتا ہے تو منظروں کی دلکشی بڑھنے لگتی ہے – یہ ہونٹوں کو مس کرتا ہے تو نغمے جاگ اٹھتے ہیں – یہ خواب بن کر خواب گاہوں کو معطر کر دیتا ہے – محبت کا احساس زندگی ہے اور زندگی کسے پیاری نہیں-
محبت معنی و الفاظ سے آگے کا قصہ ہے
محبت صاحبِ احساس کے من کا اجالا ہے
محبت صورتِ خوشبو اترتی ہے رگِ جاں میں
محبت تازہ پھولوں کی صباحت کا حوالہ ہے
———–
محبت بارگاہِ عشق سے رہتی ہے ہم رشتہ
محبت خوشبوؤں سے داستاں تحریر کرتی ہے
محبت خامشی کی گود بھر دیتی ہے معنی سے
محبت جذبہ و احساس کو تصویر کرتی ہے
————
محبت گریہءِ یعقوب ہے
یوسف کی خوشبو ہے

You might also like

Leave A Reply

Leave Your Comments for this Post